تازہ ترین  

تُو جب بھی چاہے مجھے اپنا دیوانہ بنا لے
    |     7 days ago     |    شعر و شاعری
اس میں کسی غیر کی شراکت معانی خیز کہاں
تُو جب بھی چاہے مجھے اپنا دیوانہ بنا لے

تپتی ریت صحرا کنارے گر چلتے ہوئے تھکوں
تجھ کو یہ حق ھے تُو میرے نام کا میخانہ بنا لے

یہ شمع تری ہوا کے دوش پر بُجھتی چلی جاتیھے
ہاتھ رکھ لے مجھ پر اپنا خود کو میرا پروانہ بنا لے

سامنے تم بیٹھو اور رہیں ہوش میں وہ بھی ہم
ایسا ھے تو چل مرے وجود کا کوئی بت خانہ بنا لے

گھنگھڑوں کی چھنکار پر مگن ناچتی تتلیوں جیسی
زلف نہ جھٹکا مرے محبوب خودکو میراجانانہ بنا لے






Comments


There is no Comments to display at the moment.



فیس بک پیج


اہم خبریں

تازہ ترین کالم / مضامین


نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2018 apkibat. All Rights Reserved