تازہ ترین  

آخر کیا قصور تھا ہمارا؟
    |         |    افسانہ / کہانی
چہرہء قرطاس پر کچھ الفاظ رقم کرنا چاہ رہی ہوں۔۔۔۔ مگرررر۔۔۔۔۔ کیا کروں۔۔۔۔۔ دماغ سوچنے سے عاری ہے۔۔۔۔۔ قلم ساتھ دینے سے انکاری ہے۔۔۔۔ اور الفاظ کہیں گم ہیں۔۔۔۔۔ سوچتی ہوں تو روح تک کانپ اٹھتی ہے۔۔۔۔پھر قلم اٹھانے کی ایک ناکام کوشش کرتی ہوں کہ آنکھوں کے سامنے چاروں مقتولین کے لہو لہان لاشے آجاتے ہیں۔۔۔۔ جن میں نو عمر اریبہ بھی شامل ہے۔۔۔۔۔ یہ سب سراپا سوال ہیں۔۔۔۔ حکومتی اداروں سے۔۔۔۔۔ پولیس اہلکاروں سے۔۔۔۔ پوری قوم سے۔۔۔۔۔ کہ آخر کیا قصور تھا ہمارا جو ہم سے جینے کا حق یوں چھینا گیا؟؟؟ کیا دہشت گرد اس طرح فیملی کے ساتھ سفر کرتے ہیں؟؟؟ اگر بالفرض ہم دہشت گرد بھی تھے تو کیا ہم کلبھوشن سے بھی بڑے مجرم تھے؟؟؟ میرے پاس ان سوالات کے کوئی جوابات نہیں اور پھر میں قلم رکھنے لگتی ہوں۔۔۔۔ کہ یکایک باقی بچ جانے والے عمیر، منیبہ اور ہادیہ کے سسکتے چہرے رلا ڈالتے ہیں۔۔۔۔ ان کے چہروں پر کرب کی ایک داستان رقم ہے۔۔۔۔ کہ اب انہیں کھلونے کون دلاۓ گا۔۔۔۔؟؟؟ سکول جاتے ہوے لنچ کون تھماۓ گا؟؟ اور واپسی کی راہ کون تکا کرے گا؟؟ زندگی کی شاہراہ بہت طویل ہے۔۔۔۔
اور کیا یہ بچے زندگی کے اس سفر میں اپنے والدین کے قاتلوں کو سزا پاتا دیکھ پائیں گے۔۔۔؟؟؟
ان گنت لاجواب سوالات ہیں جو منہ کھولے کھڑے ہیں اور مجھے کچھ لکھے بغیر قلم رکھنا پڑجاتا ہے۔۔۔۔

نہ ادھر اُدھر کی تو بات کر
یہ بتا کہ قافلہ کیوں لُٹا؟؟؟
مجھے رہزنوں سے گلہ نہیں
تیری رہبری کا سوال ہے!!!!!!!





Comments


There is no Comments to display at the moment.



فیس بک پیج


اہم خبریں

تازہ ترین کالم / مضامین


نیوز چینلز
قومی اخبارات
اردو ویب سائٹیں

     
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ آپکی بات محفوظ ہیں۔
Copyright © 2018 apkibat. All Rights Reserved